6

سست شروعات کی اپنی شبیہ بدلنے کی ہوگی کوشش : وراٹ

ایڈی لیڈ : کپتان وراٹ کوہلی نے کہاہے کہ ہندستان غیر ملکی دورے میں اپنی سست شروعات کے لیے تنقید کا نشانہ بنتارہاہے لیکن موجودہ آسٹریلیادورے میں وہ اس شبیہ کو پوری طرح سے بدلنا چاہتے ہیں ۔

ہندستانی کپتان نے جمعرات سے شروع ہورہے ایڈی لیڈ ٹسٹ سے قبل یہاں پریس کانفرنس میں کہا،’’ہندستان کی شروعات غیر ملکی دورے میں سست رہی ہے اور انگلینڈ اور جنوبی افریقہ کے حالیہ دوروں میں بھی ایسا ہی ہواتھا۔لیکن ہماری کوشش موجودہ دورے میں آسٹریلیاکےماحول کے مطابق خود کو جلد ازجلد ڈھال کر یہاں اچھی شروعات کرنے کی ہوگی ۔
‘‘
انھوں نے کہا،’’ہم یہاں ہلکی پھلکی شروعات کے بارے میں نہیں سوچ رہے ہیں ۔ہم سبھی کھلاڑی یہاں مثبت شروعات کرنا چاہتے ہیں اور اپنا کھیل کھل کر دکھانا چاہتے ہیں ۔ہم یہاں اپنا اے گیم کھیلنا چاہتے ہیں اور وہ بھی پہلے ہی میچ اور پہلے ہی دن سے جس سے آگے کی سیریز میں بھی ہمیں مددملے گی۔

وراٹ نے کہاکہ ٹیم حالات کے مطابق خود کو ڈھالنے کا انتظار نہیں کرسکتی ۔انھوں نے کہا،’’ہم اس میں وقت نہیں برباد کرسکتے کہ یہاں کی پچ کیسی ہے۔ ہمیں ابتداسے اسے سمجھ کر اپنے کھیل میں تبدیلی لانی ہوگی ۔ہم ایسا پچھلے دودوروں میں نہیں کرسکے ہیں ۔لیکن ہم جب بھی ایسا کرتے ہیں جیتتے ہیں ۔ہمیں سیریز جیتنے کے لیے آگے ان باتوں کا خیال رکھنا ہوگا۔ ہمیں کھیل میں مستقل مزاجی لانی ہوگی ۔
‘‘
آسٹریلیائی ٹیم اس بار اسٹیون اسمتھ اور ڈیوڈوارنر کی کمی محسوس کررہی ہے جنھیں معطل کردیاگیاہے اور اس سے بھی ہندستان کو آئیندہ سیریز میں فائدہ مل سکتاہے ۔حالانکہ وراٹ نے اس سے انکار کیا۔انھوں نے کہا،’’آسٹریلیا جن کھلاڑیوں کے ساتھ بھی کھیلنے کے لیے اترے وہ بھی کمزور نہیں ہے ۔ہم انھیں ہلکے میں نہیں لے سکتے چاہے انکے کتنے ہی اچھے کھلاڑی باہر ہوں ۔ہمیں اپنی طرف سے اچھا کھیلنا ہوگا۔
‘‘
ستمبر میں پشت میں چوٹ کی وجہ سے ٹیم سے باہر چل رہے آل راؤنڈر ہاردک پانڈیا کی غیر موجودگی کو حالانکہ ٹیم کےلیے بڑا نقصان بتایا۔انھوں نے کہا،’’ہر ٹیم تیز گیندباز آل راؤنڈر چاہتی ہے اور ہاردک کے زخمی ہونے کی وجہ سے فی الحال وہ ہمارے پاس نہیں ہے ۔لیکن انکی غیرموجودگی میں باقی کھلاڑی حالات سنبھال سکتے ہیں ہاردک کا نہ ہونا ہمارے لیے نقصان ہے لیکن یہ بڑا مسئلہ نہیں ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں