20

بادل سکھ مخالف فساد ات سے متعلق بے بنیاد باتیں بند کریں : امریندر

چنڈی گڑھ: پنجاب کے وزیراعلیٰ کیپٹن امریندر سنگھ نے شرومنی اکالی دل کے سربراہ سکھ بیر سنگھ بادل کو تلقین کی ہے کہ وہ 1984 کے فساد کے سلسلے میں بےبنیاد بیان بازی نہ کریں کیونکہ فسادات کے وقت وہ اچانک غائب ہو گئے تھے۔

کیپٹن سنگھ نے آج یہاں کہا کہ بادل فسادات کے لئے گاندھی خاندان کو قصوروار ٹھہرا رہے ہیں جبکہ یہ بالکل غلط ہے ۔ یہ پوری طرح بے بنیاد ہے کیونکہ تشدد کے وقت راجیو گاندھی مغربی بنگال میں انتخابی مہم کر رہے تھے اور راہل گاندھی اسکول میں پڑھتے تھے ۔فساد میں اس خاندان کے کردار کی بات کرنے والوں کو ہوا میں باتیں کرنے کے بجائے زمین پر رہ کر بات کرنی چاہیے۔مسٹر بادل کو آئندہ لوک سبھا الیکشن کی فکر ہونے لگی ہے اور اس حساس معاملے پر لوگوں کےجذبات سے کھلواڑ کرکے انہیں ووٹ نہیں ملیں گے اور شرومنی اکالی دل کا حال لوک سبھا الیکشن میں گزشتہ اسمبلی انتخابات کی طرح ہی ہوگا۔

انہوں نے مسٹر بادل کے اس الزام کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ انہیں مسٹر راہل نے گاندھی خاندان اور کانگریس پارٹی کا بچاؤ کرنے کے لئے میدان میں نہیں اتارا ہے، گاندھی خاندان کو اپنے بچاؤ میں کسی کو بھی میدان میں اتارنے کی ضرورت نہیں ہے کیونکہ فسادات میں ان کے کردار کا کوئی ثبوت ہی نہیں ہے۔ متاثرین میں سے کسی نے بھی اس معاملے میں گاندھی خاندان پر کبھی الزام عائد نہیں کیا تھا۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ کانگریس کی قیادت کی حمایت جب تک انہیں ملے گی تب تک وہ وزیراعلیٰ رہیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں